تلنگانہ

این آئی اے کے عہدیداروں نے تلنگانہ ہائی کورٹ کی خاتون وکیل کو حراست میں لے لیا !

حیدرآباد _ 23 جون ( اردولیکس) نیشنل انوسٹی گیشن ایجنسی ( این آئی اے ) نے تلنگانہ ہائی کورٹ کی خاتون وکیل شلپا کو ایک نرسنگ کی طالبہ کو نکسلائٹ میں شامل کروانے کے الزام میں حراست میں لے لیا ہے

آج صبح شلپا کے مکان کی این آئی اے کے  عہدیداروں نے تلاشی لی۔شہرحیدرآباد کے  اُپل کے چلکانگر میں جمعرات کی صبح این آئی اے کے عہدیدار پہنچے اور ان کے مکان کی تلاشی لی۔آندھراپردیش کے وشاکھاپٹنم میں تین سال پہلے لاپتہ رادھا نامی نرسنگ طالبہ کو نکسلائٹس میں شامل کروانے کا شلپا پر الزامات ہے۔

وشاکھاپٹنم میں گمشدگی کے درج معاملہ کی جانچ تازہ طورپر این آئی اے کے حوالہ کی گئی ہے۔وشاکھاپٹنم پولیس کی جانب سے درج کردہ ایف آئی آر کی بنیاد پر این آئی اے کے عہدیداروں نے شلپا کے خلاف معاملہ درج کرکے جانچ کا آغاز کیا۔شلپا کو حراست میں لینے کے بعد این آئی اے کے عہدیدارشہرحیدرآباد کے مادھاپور میں واقع این آئی اے کے دفتر لے گئے۔رادھا کی گمشدگی کے معاملہ کے سلسلہ میں شلپا سے پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔رادھا کے والدین نے پولیس سے کی گئی شکایت میں الزام لگایا ہے کہ تین سال پہلے ان کی بیٹی کا اغواکیاگیا۔

متعلقہ خبریں

Back to top button