تلنگانہ

میں حسین ساگر جھیل کے پاس 5 منٹ نہیں ٹہر سکا _ چیف جسٹس تلنگانہ

حیدرآباد _ تلنگانہ ہائی کورٹ کے چیف جسٹس ستیش چندرشرما نے حسین ساگر کی حالت زار پر افسوس کا اظہار کیا اور عوام سے خواہش کی کہ شہر کی صفائی کی برقراری اور ماحولیات کے تحفظ کے لئے اقدامات کریں۔انہوں نے کہا کہ جب وہ حیدرآباد  آرہے تھے تو اُن سے کہاگیا تھا کہ اس شہر میں ایک خوب صورت جھیل حسین ساگر ہے، انہوں نے اپنے ڈرائیور سے پہلی بات یہ کی کہ وہ حسین ساگر دیکھنا چاہتے ہیں جس کے بعد ان کے ڈرائیور اور پی ایس او اُن کو حسین ساگر لے گئے تاہم وہ وہاں پانچ منٹ سے زیادہ نہیں ٹہرسکے۔انہوں نے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے ہمارے ماحولیات کے ساتھ ایسا کچھ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ جب وہ ہائی کورٹ کو پہنچے تو انہوں نے پوچھا کہ ہائی کورٹ کے قریب یہ نالہ کیسا ہے جس پر ان سے کہاگیا کہ یہ نالہ نہیں بلکہ یہ موسی ندی ہے۔اس کو دیکھ کر وہ سکتہ سے دوچار ہوگئے۔انہوں نے دوہاتھ جوڑتے ہوئے اپیل کی کہ شہر کو صاف ستھرارکھاجائے اور جو کچھ بھی ماحولیات کی بہتری کیلئے ہوسکے کریں ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button