February 26, 2020

عثمانیہ یونیورسٹی کے پروفیسر کو فوری رہا کیا جاٸے

عثمانیہ یونیورسٹی کے پروفیسر کو فوری رہا کیا جاٸے

 

اوٹکور-20 جنوری ( اردو لیکس) اوٹکور مستقر میں آج چیک پوسٹ کے قومی شاہراہ پر دلت طبقہ کی جانب سے ایک احتجاجی دھرنا منظم کیا گیا۔اس موقع پر دلت طبقے کے صدر درگم سرینواس بات چیت کرتے ہوٸے کہاکہ دو دن قبل عثمانیہ یونیورسٹی کے پروفیسر سی۔ قاسم کو بلا وجہ پولیس نے ماٶ نواز سے تعلقات کے الزام میں گرفتار کیا ہے وہ بے قصور ہیں انہیں فورا رہا کیا جاٸے اور انہوں نے حکومت کو انتباہ کیا کہ پروفیسر کو رہا نہ کیا جانے پر دلت طبقہ کی جانب سے ریاستی سطح پر احتجاج و دھرنے منظم کٸے جاٸیں گے۔یہ گرفتاری مبینہ طور پر ان کے خلاف 2016 میں درج کردہ ایک مقدمہ کےسلسلے میں تھی۔ اور پروفیسر کے خلاف جتنے بھی جھوٹے الزامات عاٸد کٸے گٸے ہیں اور ان پر جتنے بھی کیس درج کٸے ہیں ان کیسوں کو برخواست کیا جاٸے اور انہیں فورا رہا کرنے کا مطالبہ کیا اس موقع پر دشرتھ اشوک انجی سھادیو گوتم وینکٹ سرینواس جگدیش اور دیگر موجود تھے۔

Post source : Urduleaks