تلنگانہ

تلنگانہ میں کونسل کے دو گریجویٹ حلقوں میں پولنگ کا آغاز

حیدرآباد_ 14 ،مارچ ( اردولیکس)تلنگانہ قانون ساز کونسل کے دو گریجویٹ حلقوں کے انتخابات کے لئے آج صبح 8 بجے سے پولنگ کے عمل کا آغاز ہوا۔جو شام 4 بجے تک جاری رہے گا ۔ دونوں حلقوں میں صبح سے ہی پولنگ مراکز پر رائے دہندوں کی قطاریں دیکھی گئیں۔کئی اہم شخصیات بشمول وزراء، ارکان اسمبلی، پارلیمنٹ اور ارکان کونسل نے اپنے ووٹ کے حق سے استفادہ کیا۔جن میں وزیر تارک راما راو، سابق میئر گریٹر حیدرآباد میونسپل کارپوریشن بی رام موہن اور دوسرے شامل ہیں دونوں حلقوں میں بھاری تعداد میں امیدوار اپنی قسمت آزمارہے ہیں۔  حیدرآباد، رنگاریڈی، محبوب نگر گریجویٹ حلقہ کیلئے 93 امیدوار اور نلگنڈہ، ورنگل، کھمم حلقہ کیلئے 71 امیدوار انتخابی میدان میں ہیں۔  دونوں حلقوں کیلئے جمبو بیالٹ تیار کیا گیا ہے۔ ان دونوں گریجویٹ حلقوں کیلئے 14 مارچ کو رائے دہی جبکہ 17 مارچ کو ووٹوں کی گنتی ہوگی۔ ریاست میں تلنگانہ قانون ساز کونسل کے احیا کے بعد اتنی بڑی تعداد میں پہلی مرتبہ امیدوار مقابلہ کررہے ہیں۔ حلقہ حیدرآباد، رنگاریڈی، محبوب نگر میں 5 لاکھ 31 ہزار 268 ووٹرس ہیں، جن کیلئے 799 پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ اس طرح حلقہ نلگنڈہ، ورنگل، کھمم کے حدود میں 5.05 رائے دہندے ہیں جن کیلئے731 پولنگ مراکز قائم کئے گئے۔80 سال سے زائد عمر کے افراد معذورین اور کورونا مریضوں کو پوسٹل بیالٹ کے ذریعہ رائے دہی کا عمل مکمل کرلیا گیا ۔دونوں حلقوں میں اہم سیاسی جماعتوں ٹی آر ایس، بی جے پی اور کانگریس کو آزاد امیدواروں سے سخت مقابلہ درپیش ہے حیدرآباد گریجویٹ حلقہ میں ماہر تعلیم و سابق پرنسپل انور خان صاحب مقابلہ میں ہیں جنھیں اقلیتوں کے علاوہ دلت، بی سی اور مختلف تنظیموں کی تائید حاصل ہے اس حلقہ سے سابق وزیراعظم پی وی نرسمہا راؤ کی دختر سورابی وانی دیوی کو ٹی آر ایس پارٹی نے امیدوار بنایا ہے جبکہ بی جے پی سے موجودہ رکن کونسل  رامچندرراو،کانگریس سے سابق وزیر جی چنا ریڈی اور تلگودیشم سے پارٹی کے ریاستی صدر ایل رمنا مقابلہ میں ہیں اسی طرح ورنگل حلقہ سے ٹی آر ایس رکن کونسل پی راجیشور ریڈی، کانگریس سے راملو نائک، بی جے پی سے پرمیندر ریڈی مقابلہ میں ہیں جبکہ اس حلقہ سے تلنگانہ جنا سمیتی کے امیدوار پروفیسر کودنڈا رام، مشہور صحافی تین مار ملنا، رانی ردراماں دیوی، چیرکو سدھاکر بھی قسمت آزمارہے ہیں 

متعلقہ خبریں

Back to top button