نیشنل

لاک ڈاؤن کے نام پر اذاں پر پابندی غیر قانونی : الہ آباد ہائی کورٹ

  لکھنؤ -15 مئی ( اردو لیکس) الہ آباد ہائی کورٹ نے ریاست کے بعض مقامات پر ضلع انتظامیہ کی جانب سے اذان پر پابندی لگائے جانے کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ کے حکم کو منسوخ کر دیا ہے۔ ہائی کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ مسجدوں میں اذان دینے کا معاملہ مذہبی آزادی سے جڑا ہے لہٰذا مسجدوں میں اذان دینے سے کسی کو نہیں روکا جا سکتاہائی کورٹ نے ریمارک کیا کہ مسجدوں میں اذان دینے سے کورونا وائرس کی گائڈ لائن کی خلاف ورزی نہیں ہورہی ہے ۔ ایسے میں کورونا وائرس کی گائڈ لائن کو بنیاد بنا کر مسجدوں میں ہونے والی اذان پر پابندی نہیں لگائی جا سکتی ۔ ریاست کے غازی پور اور فرخ آباد  اضلاع کے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ نے لاک ڈاؤن کے دوران مسجدوں سے اذان دینے پر پابندی لگا دی تھی ۔ ضلع انتظامیہ کی طرف سے لگائی جانے والی ان پابندیوں کے خلاف کانگریس کے سینئیر لیڈر سلمان خورشید اور غازی پور سے ممبر پارلیمنٹ افضال انصاری نے الہ آباد ہائی کورٹ میں آن لائن عرضی داخل کی تھی جس پر یہ ہائی کورٹ نے یہ فیصلہ سنایا ۔

متعلقہ خبریں

Back to top button