اساتذہ ملک کے مستقبل کے معمار: پرکاش جاوڈیکر

اپنے اساتذہ کے تئیں اظہار تشکر کرتے ہوئے اور قوم کی تعمیر میں اساتذہ کے کردار پر زور دیتے ہوئے فروغ انسانی وسائل کے مرکزی وزیر جناب پرکاش جاؤڈیکر نے پونہ کے فرگوسن کالج میں منعقدہ تقریب کے دوران ماہرین تعلیم، اساتذہ اور گروؤں کی عزت افزائی کی۔ گرو پرنام تقریب کے دوران انھوں نے کہا کہ جب میں اساتذہ کی عزت افزائی کررہا ہوں تو اسی وقت میں ملک کے تمام اساتذہ کو سلام کررہا ہوں۔
انھوں نے کہا کہ مہاراشٹر میں گوپال کرشن گوکھلے، بی آر امبیڈکر، مہاتما پھولے، گوپال گنیش اگرکر، لوک مانیہ تلک، مہارشی کاروے، کرم ویر بھاؤ راؤ پاٹل اور پنجاب راؤ دیشمکھ جیسے مصلحین کی ایک روایت رہی ہے جنھوں نے تعلیم پر زور دیا۔ جناب جاؤڈیکر نے اساتذہ سے کہا کہ وہ بڑا خواب دیکھنے اور زندگی میں کام آنے والا ہنر سیکھنے کے لئے طلبا کی حوصلہ افزائی کریں۔ تعلیمی نظام میں اساتذہ کیسے کایاکلپ کرسکتے ہیں اس کا ذکر کرتے ہوئے جناب جاؤڈیکر نے مدھیہ پردیش اور یو پی کی سرحد پر بندیل کھنڈ کے خطے میں واقع ستنا ضلع کے پال دیو گاؤں سے متعلق انھوں نے اپنا ایک تجربہ بیان کیا۔ گاؤں کے ایک اسکول کا بارہویں کلاس کا ریزلٹ محض 28 فیصد تھا۔ جب اس گاؤں کو سانسد آدرش گرام یوجنا کے تحت گود لیا گیا تب جناب جاؤڈیکر نے تمام اساتذہ کو اعتماد میں لیا اور انھیں رغبت دلائی۔ نتیجہ یہ ہوا کہ سات ماہ کے اندر کامیابی کا فیصد 28 سے بڑھ کر 82 فیصد تک جاپہنچا۔ انھوں نے کہا کہ اساتذہ کا جوش و جذبہ نتائج تبدیل کرسکتا ہے۔ وزیر موصوف نے اس امید کا اظہار کیا کہ اساتذہ مشن موڈ میں جوش و جذبے کے ساتھ تعلیم کے معیار کو بہتر بنانے کے کام میں اپنا تعاون دیں گے۔

تقریب کے دوران وزیر موصوف نے جن اساتذہ کی عزت افزائی کی ان میں مہاراشٹر ایجوکیشن سوسائٹی سے وابستہ رہے جناب پی ایل گاوڑے، معروف مصنف ڈی ایم میراسدار، معروف سائنسداں ڈاکٹر آر اے ماشیل کر، ماہرین تعلیم شرد واگھ، پی سی شیجوالکر، دادا پنٹام برکر ڈاکٹر ایس این نول گُنڈکر اور ڈاکٹر وانی کے نام شامل ہیں۔