جرائم و حادثات

نظام آباد قاتلانہ حملہ کے کیس میں ملوث ایک اور ملزم کی گرفتاری

نظام آباد_ 24 جون ( اردولیکس)  تلنگانہ کے نظام آباد شہر کے سائی نگر کے پاس 22 جون کی رات دو نوجوانوں پر چاقو سے جان لیوا حملہ کرنے کے الزام میں پولیس نے آج ایک اور  حملہ آور کو گرفتار کرلیا۔ نظام آباد پولیس نے میڈیا کے سامنے اس کیس کے پانچویں ملزم کو پیش کیا  جس کی شناخت محمد اصغر خان کی حیثیت سے کی گئی ہے جو نظام آباد کے لائس گلی کا رہنے والا ہے رئیل اسٹیٹ کا کاروبار کرتا ہے جو اس واقعہ کے بعد فرار ہوگیا تھا اس کے چار ساتھیوں کو پولیس نے دو دن قبل ہی گرفتار کیا تھا پولیس نے اسے اس کیس میں ملزم نمبر دو بنایا تھا  اے سی پی وینکٹیشور نے ملزم کو گرفتار کرنے پر نظام آباد ساوتھ رورل انسپکٹر کی ستائش کی

واضح رہے کہ کمشنر پولیس نظام آباد ناگا راجو نے حملہ آوروں کو میڈیا کے سامنے پیش کرتے ہوئے بتایا تھا کہ چہارشنبہ کی رات 12 بجے کے قریب آٹو میں ریلوے اسٹیشن جانے والے چند نوجوانوں کو دو موٹر سائیکل پر سوار 6 نوجوانوں نے سائیڈ نہ دینے کے چھوٹے مسلہ پر آٹو روک کر حملہ کردیا۔جس میں سائی کرشنا اور وشنو کو پیٹھ پر چاقو سے حملہ کرتے ہوئے زخمی کردیا گیا۔جب کہ آٹو میں سوار دیگر افراد کو بھی مارا گیا۔حملہ آوروں کی شناخت کرتے ہوئے انہیں گرفتار کرلیا گیا۔گرفتار ہونے والوں میں سید خواجہ پینٹر کالونی، عبدازبیر دھرماپوری ہلز، محمد شاداب آٹو نگر،شیخ فیروز آٹو نگر شامل ہیں جبکہ دو ملزم اصغر خان اور سلام مفرور بتائے گئے تھے جن میں آج ایک کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔

متعلقہ خبریں

Back to top button