انٹر نیشنل

اومیکرون سے برطانیہ میں پہلی موت

نئی دہلی: دنیا بھرمیں تیزی کے ساتھ پھیلنے والے کورونا کے نئے ویرئنٹ اومیکرون سے برطانیہ میں پہلی موت ہوئی ہے۔ برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ برطانیہ میں اومیکرون سے پہلی موت ہوئی ہے۔

انھوں نے بتایا کہ برطانیہ میں اس وقت کورونا سے متاثرہ مریضوں میں سے 40 فیصد اومیکرون سے متاثر ہیں۔ واضح رہے کہ ورلڈ ہیلت آرگنائزیشن نے کہا ہے کہ دنیا کے63ممالک میں اومیکرون تیزی سے پھیل چکا ہے۔برطانیہ میں اومیکرون کے تیزی سے پھیلاو کو دیکھتے ہوئے کورونا کے بوسٹر ڈوز کی تقسیم کا پروگرام شروع کیا گیا ہے۔
صرف اتوار کو برطانیہ میں 1239 اومیکرون کیس سامنے آئے ہیں۔ برطانیہ میں omicran کے 3100 سے زیادہ کیس  ہو چکے ہیں۔اومیکرون کا پہلا کیس  27 نومبر کو برطانیہ میں سامنے آیا تھا۔ اس کے ساتھ بورس جانسن نے کئی سخت پابندیاں نافذ کرنے‌کا‌اعلان‌کیا‌تھا۔ اس کے علاوہ، اتوار کو انہوں نے عوام سے اپیل کی تھی کہ وہ اس مختلف انفیکشن سے بچانے کے لیے بوسٹر خوراک لیں جس کے بعد ویکسینیشن مراکز پر بوسٹر ڈوز کے لیے عوام کی کثیر تعداد پہنچ رہی ہے۔ 

متعلقہ خبریں

Back to top button