سابق مرکزی وزیر و کانگریس لیڈر آسکر فرنانڈیز کا انتقال _ وزیراعظم مودی اور صدر کانگریس سونیا گاندھی کا اظہار تعزیت

نئی دہلی _ کانگریس کے سینئر  لیڈر اور سابق مرکزی وزیر آسکر فرنانڈیز کا انتقال ہوگیا ۔ وہ 80 برس کے تھے۔ آسکر فرنانڈیز کا جولائی میں ایک حادثے میں زخمی ہونے کے بعد ہاسپٹل میں علاج چل رہا تھا ۔ وہ آئی س یو میں شریک تھے۔ انھیں اہلیہ اور دو بچے ہیں ۔ آسکر فرنانڈیز  27 مارچ 1941 میں ہوئے ۔

آسکر فرنانڈیز کانگریس صدر سونیا گاندھی اور پارٹی لیڈر راہل گاندھی کے کافی قریبی تھے۔ انہوں نے سابق وزیراعظم راجیوگاندھی کے پارلیمانی سکریٹری کے طور پر بھی خدمات انجام دیں۔

انہوں نے منموہن سنگھ کابینہ میں ٹرانسپورٹ اور محنت کے محکمے کے وزیر کے فرائض ادا کئے ۔ وہ کانگریس کی انتخابی کمیٹی کے صدر بھی رہے۔ انہوں نے کرناٹک کانگریس کے صدر کے طور پر دوباراپنی خدمات دیں۔ انہیں 1998 اور 2004 میں راجیہ سبھا کا رکن منتخب کیا گیا ۔ انہوں نے مرکزی وزیر کے طور پر 2004 سے لیکر 2009 تک اپنی خدمات انجام دیں۔ اس دوران انہوں نے وزیر کےطور پر شماریات، نوجوانوں اور کھیل اور مؤثر ہندوستانی امور کےعلاوہ دیگر محکموں کی ذمہ داری سنبھالی۔

وزیراعظم نے راجیہ سبھا کے رکن پارلیمان  آسکر فرنانڈیز کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا

وزیراعظم  نریندر مودی نے راجیہ سبھا کے رکن پارلیمان آسکرفرنانڈیز جی کے انتقال پر گہرے رنج وغم کا اظہار کیا ہے۔

وزیراعظم کے دفتر نے ٹویٹ کیا؛

’’راجیہ سبھا کے رکن پارلیمان آسکرفرنانڈیز جی کے انتقال پر غمزدہ ہوں ۔اس غم کی گھڑی میں میرے خیالات اور دعائیں ان کے کنبے اور خیرخواہوں کے ساتھ ہیں۔ ان کی روح کو تسکین نصیب ہو

صدر کانگریس سونیا گاندھی کا اظہار تعزیت 

کانگریس صدر سونیا گاندھی نے پیر کو پارٹی کے سینئر لیڈر اور سابق مرکزی وزیر آسکر فرنانڈیز کے انتقال پر تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ ”فرنانڈیز مزدوروں اور پسماندہ طبقوں کے مسیحا تھے۔” اپنے تعزیتی پیغام میں انھوں نے کہا کہ”تجربہ کار رکن پارلیمنٹ فرنانڈیز دلی طور سے کانگریس کے رکن تھے اور وہ ہر سطح پر تنظیم کو مضبوط بنانے کے لیے وقف تھے