نیشنل

دھرم سنسد کیس میں ایک اور گرفتاری _ یاتی نرسنگھانند بھی گرفتار

حیدرآباد _ 13 جنوری ( اردو لیکس ڈیسک) اتراکھنڈ کی ہریدوار پولیس نے دھرم سنسد کے دوران مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز تقریروں کے الزام میں مرتد وسیم رضوی عرف جتیندر نارائن تیاگی کی گرفتاری کے چند گھنٹوں بعد مسلمانوں کے کٹر یاتی نرسگھانند گری مہاراج کو بھی گرفتار کرلیا۔قبل ازیں آج دوپہر پولیس نے مرتد وسیم رضوی عرف جتیندر نارائن تیاگی کو کو اتراکھنڈ پولیس نے   ہریدوار میں گرفتار کرلیا تھا ۔ان دونوں پر مسلمانوں کی نسل کشی اور نفرت کا الزام عائد ہے

 

19 دسمبر کو  ہریدوارمیں منعقدہ دھرم سنسد میں مسلمانوں کی نسل کشی کی دھمکیاں دیتے ہوئے کی گئیں قابل اعتراض اور انتہائی اشتعال انگیز تقاریر سے متعلق درج کروائی  گئی شکایت اور سپریم کورٹ کی نوٹس کے بعد پولیس نے انھیں گرفتار کرلیا۔

اس کیس میں مزید گرفتاریاں ممکن ہیں

پولیس نے مرتد وسیم رضوی عرف جتیندر نارائن تیاگی ،  دسنا مندر کے پجاری یاتی نرسنگھا نند، اور ہندو مہاسبھا کے جنرل سکریٹری اناپورنا سمیت 10 افراد کے خلاف تعزیرات ہند (IPC) کی دفعہ 153A (مذہب وغیرہ کی بنیاد پر مختلف گروہوں کے درمیان دشمنی کو فروغ دینا) کے تحت ہریدوار پولیس اسٹیشن میں مقدمہ درج کیا تھا۔

 

 

 

متعلقہ خبریں

Back to top button