تلنگانہ

ریونت ریڈی کے خلاف وزیر تارک راما راو نے ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا

حیدرآباد _ ٹی آر ایس  کے ورکنگ صدر و وزیر بلدی نظم ونسق تارک راما راو  نے حیدرآباد کے سٹی سول کورٹ میں تلنگانہ پی سی سی کے صدر ریونت ریڈی کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا ہے۔ عرضی میں کے ٹی آر نے الزام لگایا کہ ریونت ریڈی نے ان کے خلاف جھوٹے الزامات لگاتے منشیات کے معاملے میں ان کی ساکھ کو داغدار کیا ہے۔ کے ٹی آر نے سٹی سول کورٹ سے کہا کہ وہ ریونت ریڈی کے جھوٹے الزامات کو ہتک عزت کی کارروائی سمجھتے ہوئے غیر مشروط طور پر عوام کے سامنے معافی مانگنے کے احکامات جاری کریں ۔ ریونت ریڈی کو اخبارات، ٹی وی اور سوشل میڈیا کے ذریعے معافی مانگنے کا حکم دیا جائے۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ ریونت کو ٹویٹر ، فیس بک اور دیگر سوشل میڈیا سے ہتک آمیز تبصرے ہٹانے کی ہدایت دی جائے۔ ریونت ریڈی کے پیروکاروں کو منشیات کے پورے کیس کے سلسلے میں ان کے خلاف غلط اور ہتک آمیز ریمارکس دینے سے روکنے کے احکامات جاری کیے جائیں۔

کے ٹی آر نے درخواست میں کہا کہ وہ ریونت ریڈی سے ہتک عزت کا معاوضہ لینے کے لیے درکار مزید تفصیلات اکٹھا کر رہے ہیں اور وقت آنے پر عدالت میں پیش کریں گے ۔ دانستہ طور پر منشیات کے کیس میں انھیں گھسیٹا جا رہا ہے جبکہ ان کا  منشیات کے پورے کیس سے کوئی تعلق نہیں ہے  وزیر کی حیثیت سے  وہ ریاست کے ساتھ ساتھ ملک اور بیرون ملک میں ایک لیڈر کی حیثیت سے شہرت رکھتے ہیں ۔ کے ٹی آر نے الزام لگایا ہے کہ وہ پی سی سی کی صدارت کا غلط استعمال کر رہے ہیں  اور ان  کی ساکھ کو نقصان پہنچا رہے ہیں کے ٹی آر نے کہا کہ انھیں کسی تفتیشی ایجنسی کی طرف سے کوئی نوٹس نہیں ملی ۔تاہم ریونت ریڈی بدنیتی پر مبنی جھوٹے الزامات لگا رہے ہیں۔ کے ٹی آر کی جانب سے دائر درخواست فی الحال سٹی سول کورٹ آفس میں زیر التوا ہے۔

متعلقہ خبریں

Back to top button