تلنگانہ

تلنگانہ میں بی جے پی اقتدار میں آنے پر مسلم تحفظات ختم کردئے جائیں گے: حیدرآباد میں جلسہ عام سے امیت شاہ کا اعلان

حیدرآباد _ 14 مئی ( اردولیکس) مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے تلنگانہ ميں مذہب کی بنیاد پر مسلمانوں کو دئے جانے والے تحفظات کو ختم کرتے ہوئے ایس سی،  ایس ٹی اور بی سی طبقات کے ساتھ انصاف کرنے کا وعدہ کیا۔ تکو گوڑہ ميں بی جے پی کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے کہا کہ تلنگانہ میں مذہب کی بنیاد پر تحفظات فراہم کئے گئے ہیں جس کی وجہ سے ایس سی، ایس ٹی اور بی سی طبقات کے تحفظات میں کمی ہوئی ہے۔ لیکن تلنگانہ میں بی جے پی اقتدار میں آنے کے بعد مذہب کی بنیاد پر دیئے گئے تحفظات کو ختم کردے گی جس سے ایس سی، ایس ٹی اور بی سی طبقات کے تحفظات میں کئی گئی کٹوتی کا مسئلہ حل ہوجائے گا اور ان کے ساتھ مناسب انصاف بھی ہوگا۔

امیت شاہ نے کہا کہ چیف منسٹر و صدر ٹی آر ایس کے چندرشیکھرراو کو چیلنج کیا کہ وہ کسی بھی وقت تلنگانہ میں اسمبلی کے انتخابات کروائیں‘ ریاست کے کے نوجوان ٹی آر ایس حکومت کو اکھاڑ پھینکنے تیار ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی حتی کہ اتوار کو بھی اگر انتخابات منعقد ہوتے ہیں تو اس کا سامنا کرنے کے لئے بے چین ہے۔ شہر حیدرآبادکے مضافاتی علاقہ تکوگوڑہ میں بی جے پی کے جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے امیت شاہ نے چندرشیکھرراو حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

 

متعلقہ خبریں

Back to top button