ناندیڑ اسلحہ ضبطی معاملہ ایک ہی الزام کی ملزم کو دو مرتبہ سزا نہیں دی جاسکتی : ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان


ممبئی 1 / مارچ( پریس ریلیز)مہاراشٹر کے ناندیڑ ضلع کے مختلف علاقوں سے دہشت گردی کے الزامات کے تحت گرفتار پانچ ملزمین کے مقدمہ میں آج خصوصی این آئی اے عدالت فیصلہ ظاہرکرنے والی تھی لیکن فیصلہ ظاہر کرنے سے قبل دفاعی وکیل نے عدالت میں ایک عرضداشت داخل کرتے ہوئے کہا کہ اس مقدمہ کا سامنا کررہے ایک ملزم کو بنگلور سیشن عدالت نے سزا دی ہے لہذا اس کے خلاف ایک ہی الزام کے تحت دو مرتبہ مقدمہ چلایا نہیں جاسکتا کیونکہ قانون میں اس کی گنجائش نہیں ہے۔
ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان نے ملزم محمد اکرم محمد اکبر کی جانب سے عرضداشت داخل کرتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ کریمنل پروسیجر کوڈ کی دفعہ 300 کے مطابق ملزم پر ایک ہی الزام کے تحت دو مرتبہ مقدمہ چلایا نہیں جاسکتا۔ ایڈوکیٹ خان نے عدالت کو بتایا کہ ملزم اکرم پر جن الزامات کے تحت ممبئی میں مقدمہ چلا یاگیاہے انہیں الزامات کے تحت اس پر بنگلور میں بھی مقدمہ چلا یا گیا تھا جہاں اسے پانچ سال کی سزا ہوئی تھی لہذا قانونی اصطلاح”ڈبل جیو پارڈی“کے تحت زیر سماعت مقدمہ میں ملزم کو سزا نہیں دی جاسکتی ہے۔
ایڈوکیٹ عبدالوہاب خان نے عدالت میں عرضداشت کے ساتھ بنگلور عدالت کے فیصلہ کی سرٹیفائیڈ کاپی بھی پیش کی۔
عدالت نے ایڈوکیٹ عبدالوہاب خا ن کے ذریعہ داخل کردہ عرضداشت کو سماعت کے لیئے قبول کرتے ہوئے این آئی اے کو حکم دیا کہ وہ 6 مارچ سے قبل عدالت میں جواب داخل کرے اور اپنی سماعت ملتوی کردی۔